اے ایم ایل پالیسی

غیر قانونی سرگرمیوں (جیسے دھوکہ دہی، بدعنوانی، دہشت گردی وغیرہ) سے حاصل کردہ فنڈز کے اصل ماخذ کو چھپانے یا مسخ کرنے کی غرض سے دیگر جائز نظر آنے والے فنڈز یا سرمایہ کاری میں تبدیل کرنے کے عمل کو منی لانڈرنگ کہتے ہیں۔

منی لانڈرنگ کے عمل کو 3 ترتیب وار مراحل میں تقسیم کیا جا سکتا ہے۔
  • پلیسمنٹ: اس مرحلے پر فنڈز کو فنانشل انسٹرومنٹس میں تبدیل کیا جاتا ہے جیسے چیک، بینک اکاؤنٹس، رقم کی منتقلی یا پھر زیادہ قدر رکھنے والی اشیاء کی خریداری کے لیے استعمال کرنا جو دوبارہ فروخت کی جا سکتی ہیں۔ فنڈز کو مادی طور پر بینکوں اور دیگر مالی اداروں (جیسے کرنسی ایکسچینجر) میں بھی جمع کروایا جاتا ہے۔ شکوک و شبہات سے بچنے کے لیے، اکثر منی لانڈرنگ کرنے والا پوری رقم ایک ساتھ جمع کروانے کی بجائے متعدد قسطوں میں جمع کرواتا ہے۔ پلیسمنٹ کی اس شکل کو سمرفنگ کہا جاتا ہے۔
  • لیئرنگ: دوسرے اکاؤنٹس اور فنانشل انسٹرومنٹس میں فنڈز ٹرانسفر یا تبدیل کیے جاتے ہیں۔ یہ ماخذ کو چھپانے اور اس فرد/ ادارے کی شناخت میں مشکلات پیدا کے لیے کیا جاتا ہے جو یہ متعدد مالیاتی لین دین کرتا ہے۔ فنڈز کو ادھر ادھر منتقل کرنا اور ان کی شکل تبدیل کرنا منی لانڈرنگ کا سراغ لگانے کے عمل کو پیچیدہ بنا دیتا ہے۔
  • انضمام (انٹیگریشن)۔ فنڈز جائز پیسے کے طور پر سامان اور سروسز کی خریداری کے لیے دوبارہ گردش میں آ جاتے ہیں۔

AML پالیسی

فنانشل مارکیٹس میں سروسز فراہم کرنے والی زیادہ تر کمپنیوں کی طرح Justforex بھی اینٹی منی لانڈرنگ کے اصولوں کی پابندی کرتی ہے اور غیر قانونی طریقے سے حاصل کردہ فنڈز کو قانونی شکل دینے یا اس عمل میں سہولت فراہم کرنے والے کسی بھی اقدام کو روکتی ہے۔ AML پالیسی کا مطلب مجرموں کی طرف سے منی لانڈرنگ، دہشت گردی کی مالی معاونت یا دیگر مجرمانہ سرگرمیوں کے لیے کمپنی کی سروسز کے استعمال کو روکنا ہے۔

اس مقصد کے لیے کمپنی نے ہر قسم کی مشکوک سرگرمیوں کا پتہ لگانے، ان کی روک تھام اور متعلقہ اداروں کو اس بارے میں خبردار کرنے سے متعلق سخت پالیسی متعارف کروائی ہے۔ اس کے علاوہ، Justforex کو کلائنٹس کو مطلع کرنے کا حق نہیں ہے کہ قانون نافذ کرنے والے اداروں کو ان کی سرگرمیوں کے بارے میں مطلع کیا گیا ہے۔ کمپنی کے ہر کلائنٹ کی شناخت اور ان کے تمام آپریشنز کی تفصیلات کے لیے بھی ایک پیچیدہ الیکٹرانک سسٹم متعارف کروایا گیا ہے۔

منی لانڈرنگ کو روکنے کی غرض سےJustforex کسی صورت میں بھی نہ نقد رقم قبول کرتی ہے اور نہ نقد ادائیگی کرتی ہے۔ کمپنی کسی بھی کلائنٹ کے ایسے آپریشن کو معطل کرنے کا حق محفوظ رکھتی ہے جو کمپنی کے عملے کی رائے میں ممکنہ طور پر غیر قانونی یا منی لانڈرنگ سے تعلق رکھتا ہو۔

کمپنی کے طریقۂ کار

Justforex صرف حقیقی فرد یا قانونی ادارے سے ڈیلنگ کو یقینی بناتی ہے۔ Justforex متعلقہ حکام کے جاری کردہ قابل اطلاق قوانین اور ضوابط کے مطابق تمام ضروری اقدامات بھی کرتی ہے۔ Justforex میں AML پالیسی پر مندرجہ ذیل طریقے سے عمل کیا جاتا ہے:
  • نو یور کسٹمر پالیسی پر عمل اور محتاط رویہ ؛
  • کلائنٹ کی سرگرمیوں کی نگرانی؛
  • ریکارڈ محفوظ بنانا

نو یور کسٹمر پالیسی پر عمل اور محتاط رویہ ؛

AML اور KYC کی پالیسیوں پر عمل کی وجہ سے کمپنی کے ہر کلائنٹ کے لیے تصدیق کا عمل مکمل کرنا ضروری ہوتا ہے۔ کمپنی، کلائنٹ کے ساتھ کسی قسم کے تعاون سے قبل اس بات کو یقینی بناتی ہے کہ کسی بھی کسٹمر یا ہم منصب کی شناخت کے تسلّی بخش ثبوت فراہم کیے جائیں۔ کمپنی ایسے کلائنٹس کی سخت جانچ پڑتال کرتی ہے جو ان ممالک کے باشندے ہوں جہاں معتبر ذرائع کی رائے میں AML کا معیار غیر تسلّی بخش ہو یا جہاں جرائم اور بدعنوانی کا خطرہ زیادہ ہو، اور ان مراعات یافتہ مالکان کی بھی جن کے فنڈز ان ممالک سے حاصل کیے جاتے ہیں اور جو وہاں کے رہائشی ہوں۔

انفرادی کلائنٹس

رجسٹریشن کے دوران ہر کلائنٹ ذاتی معلومات فراہم کرتا ہے، خاص طور پر: مکمل نام، تاریخ پیدائش، رہائش کا ملک، فون نمبر، مکمل پتہ بشمول سٹی کوڈ۔ KYC کے لیے کمپنی کی شرائط پوری کرنے اور شناخت اور فراہم کردہ معلومات کی تصدیق کے لیے انفرادی کلائنٹس کے لیے کمپنی کی درخواست پر درج ذیل معلومات فراہم کرنا ضروری ہیں:
  • درج ذیل معلومات کے ساتھ حکومت کی جاری کردہ شناختی دستاویز کی ہائی ریزولوشن کاپی (اعلیٰ معیار کی نقل): مکمل نام، تاریخ پیدائش، تصویر اور شہریت، اس کے علاوہ جہاں جہاں قابل اطلاق ہو: دستاویز کی میعاد کی تصدیق (تاریخِ اجراء اور/یا تاریخِ تنسیخ) اور کارڈ ہولڈر کے دستخط۔ یہ شناختی دستاویز پاسپورٹ، قومی شناختی کارڈ، ڈرائیونگ لائسنس وغیرہ ہو سکتی ہے۔ ان دستاویزات کا فائلنگ کے وقت کم از کم 6 ماہ کے لیے کارآمد ہونا ضروری ہے۔ کمپنی کلائنٹ سے ان دستاویزات کی تصدیق شدہ کاپیوں کی درخواست کرنے کا حق محفوظ رکھتی ہے، اور یہ سرٹیفیکیشن فائلنگ کے وقت 6 ماہ سے زیادہ پرانی نہیں ہونی چاہیئے۔ کمپنی کسی اور قسم کی شناختی دستاویز کی درخواست کرنے کا حق بھی محفوظ رکھتی ہے۔
  • یوٹیلیٹی سروسز کی ادائیگی کی رسید کی ہائی ریزولوشن کاپی (اعلیٰ معیار کی نقل) (گیس، پانی، بجلی وغیرہ) یا بینک سٹیٹمنٹ جس میں کلائنٹ کا مکمل نام اور رہائش کی اصل جگہ درج ہو۔ یہ دستاویزات فائلنگ کے وقت 3 ماہ سے زیادہ پرانی نہیں ہونی چاہیئیں۔
جہاں قابلِ اطلاق ہو (مثال کے طور پر شناختی کارڈ یا ڈرائیورنگ لائسنس) دستاویز کی دونوں اطراف کی کاپی جمع کروانا ضروری ہے۔ دستاویز کی تصویر رنگین ہائی ریزولوشن فوٹو ہونی چاہیئے یا صاف اور واضح سکین کاپی جس میں کوئی سایہ یا روشنی کا انعکاس موجود نہ ہو۔ دستاویز کے چاروں کنارے نظر آنے چاہئیں۔ تمام معلومات واٹر مارک وغیرہ کے بغیر، صاف اور پڑھنے کے قابل ہونی چاہئیں۔
نئے کلائنٹس بناتے ہوئے، تصدیق کے عمل اور دستاویزات کے جائزے کے دوران، کمپنی، کلائنٹ کی شناخت کے لیے مزید شرائط اور طریقۂ کار لاگو کرنے کا حق محفوظ رکھتی ہے۔ اس قسم کے طریقۂ کار کا تعیّن کمپنی اپنی صوابدید کے مطابق کرتی ہے اور یہ کلائنٹ کے رہائشی ملک کے لحاظ سے مختلف ہو سکتے ہیں، اس میں درج ذیل شرائط شامل ہیں:
  • رقم جمع کرنے/نکالنے کے لیے استعمال ہونے والے بینک کارڈ کی تصدیق
  • فنڈز کا ذریعہ، دولت کا ذریعہ اور ان فنڈز کا ثبوت جو ایسی شکل اور انداز میں جمع کروائے جائیں جسے کمپنی نامناسب گردانتی ہو۔

کارپوریٹ کلائنٹس

اگر درخواست گزار کمپنی کسی تسلیم شدہ/ منظور شدہ اسٹاک ایکسچینج میں یا کسی اور جگہ درج ہو جہاں اس بات کا ثبوت موجود ہو کہ درخواست گزار کسی ایسی کمپنی کا مکمل ملکیتی ماتحت ادارہ یا زیر کنٹرول ادارہ ہے تو شناخت کی تصدیق کے لیے مزید کسی اقدام کی ضرورت نہیں ہو گی۔ اگر کمپنی کسی اسٹاک ایکسچینج میں درج نہ ہو اور اس کے پرنسپل ڈائریکٹرز یا شیئر ہولڈرز میں سے کسی کا بھی Justforex میں اکاؤنٹ نہ ہو تو کمپنی کے لیے KYC شرائط کی وجہ سے درج ذیل دستاویزات فراہم کرنا ضروری ہے:
  • شمولیت کے سرٹیفکیٹ/رجسٹریشن سرٹیفکیٹ کی ایک ہائی ریزولوشن کاپی۔
  • کمرشل رجسٹر یا مساوی دستاویز کا اقتباس جو کارپوریٹ ایکٹ اور ترامیم کے اندراج کو ثابت کرتا ہو۔
  • کارپوریٹ ادارے کے تمام افسران، ڈائریکٹرز اور مستفید ہونے والے مالکان کی KYC دستاویزات۔
  • مجاز رجسٹری میں باقاعدہ ریکارڈ کردہ میمورنڈم اور آرٹیکل آف ایسوسی ایشن یا مساوی دستاویزات کی ہائی ریزولوشن کاپی۔
  • کمپنی کے رجسٹرڈ پتے کا ثبوت اور شیئر ہولڈرز اور ڈائریکٹرز کی فہرست۔
  • کاروبار کی تفصیل اور نوعیت (بشمول کاروبار کے آغاز کی تاریخ ، فراہم کی جانے والی مصنوعات یا سروسز اور کاروبار کا اصل مقام)۔

اس طریقۂ کار پر عمل کا مقصد کلائنٹ کی شناخت متعین کرنا اور آن لائن ٹریڈنگ کی بہترین سروسز فراہم کرنے کے لیے کمپنی کی طرف سےکلائنٹ اور ان کے مالی معاملات کو جاننا/سمجھنا ہے۔

کلائنٹ کی سرگرمیوں کی نگرانی

کسی بھی مشکوک لین دین کا پتہ لگانے اور روک تھام کے لیے Justforex کلائنٹس سے معلومات اکٹھی کرنے کے علاوہ ہر کلائنٹ کی سرگرمیوں کی مسلسل نگرانی کرتی ہے۔ مشکوک لین دین اس لین دین کو کہا جاتا ہے جو کلائنٹ کے جائز کاروبار یا کلائنٹ کی سرگرمیوں کی نگرانی سے حاصل کردہ معلومات کے مدّنظر کلائنٹ کے معمول کے لین دین سے مطابقت نہ رکھتا ہو۔ جرائم پیشہ افراد کی طرف سے کمپنی کی سروسز کے استعمال کی روک تھام کے لیے Justforex نے نامزد لین دین (خودکار اور حسب ضرورت مینوئل دونوں) کی نگرانی کا نظام نافذ کیا ہے۔

اگرJustforex کو کسی کلائنٹ کے غیر قانونی یا ناجائز سرگرمیوں بشمول ٹریڈنگ یا فنانشل فراڈ، جعلسازی، منی لانڈرنگ وغیرہ میں ملوث ہونے کا شبہ ہو یا وہ اس کی تحقیقات کر رہی ہو تو ایسی صورت میں Justforex کو کلائنٹ سے اضافی معلومات کی درخواست کرنے کا حق حاصل ہے۔

فنڈز جمع کروانے اور نکلوانے کی شرائط

کلائنٹس کے فنڈز ڈپازٹ کرنے اور نکلوانے کی تمام کاروائیوں پر درج ذیل شرائط عائد ہوتی ہیں:
  • بینک ٹرانسفر یا بینک کارڈ سے ٹرانسفر کی صورت میں، رجسٹریشن کے دوران دیا گیا نام اکاؤنٹ/بینک کارڈ کے مالک کے نام سے مطابقت رکھتا ہو۔ بینک ٹرانسفر کے ذریعے ٹریڈنگ اکاؤنٹ سے فنڈز صرف اسی بینک اور اسی اکاؤنٹ میں نکلوائے جا سکتے ہیں جو ڈپازٹ کے لیے استعمال کیا گیا ہو؛
  • الیکٹرانک ادائیگی کا سسٹم استعمال کرنے کی صورت میں، ٹریڈنگ اکاؤنٹ سے فنڈز صرف اسی سسٹم اور اسی اکاؤنٹ میں نکلوائے جا سکتے ہیں جو ڈپازٹ کرنے کے لیے استعمال کیا گیا ہو؛
  • اگر اکاؤنٹ میں کسی ایسے طریقے سے رقم ڈپازٹ کی گئی ہو جسے فنڈز کی واپسی کے لیے استعمال نہیں کیا جا سکتا تو فنڈز کلائنٹ کے بینک اکاؤنٹ میں نکلوائے جا سکتے ہیں یا کمپنی کے ساتھ طے کردہ کوئی دوسرا طریقہ استعمال کیا جا سکتا ہے، تاکہ کمپنی کے پاس اکاؤنٹ کے مالک کی شناخت کا ثبوت موجود ہو؛
  • اگر اکاؤنٹ میں ادائیگی کے مختلف سسٹمز کے ذریعے فنڈز ڈپازٹ کیے گئے ہوں تو فنڈز کی واپسی ہر ڈپازٹ کے سائز کے تناسب کی بنیاد پر کی جائے گی۔ حاصل کردہ پرافٹ اسی اکاؤنٹ میں ٹرانسفر کیا جائے گا جہاں سے ڈپازٹ کیا گیا ہو، بشرطیکہ اس طرح کا ٹرانسفر ممکن ہو؛
  • فنڈز ڈپازٹ کرنے اور نکلوانے کے لیے کسی تیسرے فریق کے بینک اکاؤنٹ، بینک کارڈ، الیکٹرانک منی یا ادائیگی کے دیگر اکاؤنٹس کے استعمال کی اجازت نہیں ہے۔